couple, kiss, wedding-2705252.jpg

written by barbie boo

Mr.Psycho part 50 & 51. This novel is based on age difference couple who fell in love with each other


قسط______50
وہ دھیرے سے دروازہ کھول کے کمرے میں داخل ہوا ۔
بیڈ کی طرف دیکھا تو وہاں پہ کوئی نہیں تھا ۔ نظریں صوفے پہ گئیں جہاں پر آئلہ سو رہی تھی ۔ وہ ایک گہری سانس لے کے صوفے کی طرف بڑھا ۔ صوفے کے قریب پہنچ کے وہ وہی کھڑے ہوکے آئلہ کو دیکھنے لگا ۔ اس کے گال پے آنسوؤں کے نشان واضح ہو رہے تھے ۔ مطلب وہ کافی دیر روتی رہی تھی ۔وہ گہری نیند میں تھی ۔ کافی دیر تک یونہی احان بت بنے اسے تکتا رہا ۔
صوفے کی سائیڈ پہ بیٹھتے ہوئے آئلہ کا ہاتھ نرمی سے اپنے ہاتھوں میں بھرتے وہ اس پہ پیار کرنے لگا ۔ اس کا ماتھا اس کے گال اس کے چہرے پر جابجا پیار کرنے لگا ۔
ہنی اٹھ جائیں ہنی ۔ دیکھیں آپ کے مسٹر احان آگئے ۔
وہ دھیرے سے اس کے کان کے قریب سرگوشی کرنے لگا ۔
احان کی آواز آئلہ کے کان میں پڑی تو اس نے دھیرے سے آنکھیں کھولیں ۔
اسے اپنے سامنے دیکھ کر اسنے سکون کا سانس لیا ۔Mr. Psycho part 50 & 51
مسٹر احان آپ کہاں چلے گئے تھے؟ آپ کہاں چلے گئے تھے مسٹر ریحان ؟
وہ تیزی سے اٹھ بیٹھی اور احان کے گلے لگتے کہنے لگی۔
مجھے بہت ڈر لگ رہا تھا۔ کسی نے باھر سے دروازہ بند کر دیا تھا۔ میں نے بہت بار دروازہ بچایا بہت آواز دی لیکن کوئی بھی نہیں آیا ۔ کسی نے بھی دروازہ نہیں کھولا کسی نے بھی میری آواز نہیں سنی ۔میرا فون بھی نہیں تھا میں بہت ڈر گئی تھی ۔ آپ مجھے بتائے بغیر چلے گئے ۔ کیا آپ دروازہ بند کرکے گئے تھے باہر سے ؟ ہاں کیا آپ دروازہ بند کرکے گئے تھے کیا آپ مجھے کمرے میں بند کرکے گئے تھے ؟
وہ احان کے چہرے کی طرف دیکھتے ہوئے پوچھنے لگی ۔
آئی ایم سوری ہنی ۔ وہ دراصل ایمرجنسی ہو گئی تھی مجھے جانا پڑا ۔ بات کچھ کرنی تھی لیکن مجھے سمجھ نہیں آ رہا تھا کہ میں کیسے بات کروں آپ سے ۔ اس لئے میں نے سوچا کہ دروازہ بند کر کے چلا جاتا ہوں تھوڑی دیر میں آ جاؤں گا ۔ لیکن کچھ زیادہ ہی دیر ہو گئی میں معافی چاہتا ہوں ۔
آپ کو تکلیف نہیں پہنچانا چاہتا تھا نہ میں چاہتا تھا کہ آپ کو ڈر لگے یا آپ روئیں۔
وہ آئلہ کی چہرے کو اپنے ہاتھوں کے پیالے میں بھرتے پیار سے کہنے لگا ۔
مطلب آپ دروازہ بند کرکے گئے تھے لیکن آپ مجھے بتا بھی تو سکتے تھے نا۔ میں بہت ڈر گئی تھی آپ میرا فون کیوں لے گئےاپنے ساتھ؟ ایک بار بتا ہی دیتے میں اتنا ڈرتی تو نا۔ میں بہت پریشان ہو گئی تھی ۔
وہ رونی شکل بناتے ہوئے کہنے لگی ۔
آپ کا فون میرے پاس ہے جلدی میں بھول گیا تھا رکھنا ۔ پلیز معاف کر دینا مجھے ۔ بس اس وقت سمجھ نہیں آئی کہ کیا کروں۔ پتہ نہیں میں نے یہ کیسے کر دیا بہت شرمندہ ہو رہا ہوں اب میں ۔ کیا آپ رو رہی تھیں ؟
وہ آئلہ کے گال سہلاتے ہوئے اس کے گال چومتے پیار سے پوچھنے لگا ۔
ہاں میں رو رہی تھی کیونکہ مجھے ڈر لگ رہا تھا مجھے لگا شاید آپ مجھے بند کر کے چلے گئے ہیں لیکن میں سمجھ نہیں پا رہی تھی کہ آپ نے ایسا کیوں کیا ایسا لگ رہا تھا کہ شاید آپ ہمیشہ کے لئے مجھے یہاں قید کرکے چلے گئے ہیں اور کبھی واپس نہیں آئیں گے ۔
وہ احان کے سینے میں چھپتے ہوئے سہمے سے انداز میں بول رہی تھی اس کی باتیں سن کے احان کو برا لگا تھا ۔
نہیں ایسا نہیں ہے میں کیوں آپ کو قید کروں گا جب کہ آپ کے بغیر تو میں رہ بھی نہیں سکتا تو میں آپکو اکیلا چھوڑ کے کیسے جا سکتا تھا جانم ۔Mr. Psycho part 50 & 51
اس کے بالوں پہ پیار کرتے وہ دھیرے سے بولا ۔
میں آپ کو کچھ بتانا چاہتا ہوں ہنی ۔ مجھے لگتا ہے کہ اب صحیح وقت آگیا ہے کہ میں آپ کو سب کچھ بتا دوں ۔ کیونکہ اگر میں نے اور دیر کی تو ہمارے درمیان بہت غلط فہمیاں پیدا ہو جائیگی اور شاید آپ مجھ سے دور ہو جائیں ۔لیکن میں نہیں چاہتا کہ آپ مجھے چھوڑ کے جائیں مجھ سے دور ہو میں آپ کے ساتھ رہنا چاہتا ہوں ۔ مجھے نہیں پتا کہ آپ کیسے ری ایکٹ کریں گی یہ سب جاننے کے بعد لیکن میں اتنا ضرور جانتا ہوں کہ میری نیت میں کوئی کھوٹ نہیں تھا میں نے جو بھی کیا سچے دل سے کیا آپ کے لئے کیا آپ کی حفاظت کرنے کے لئے آپ کی بھلائی کے لئے آپ کو محفوظ رکھنے کے لئے ۔
میرے دل میں کوئی بھی غلط ارادہ نہیں تھا میں نے آپ کے بارے میں کچھ غلط سوچا نہ کبھی آپ کو تکلیف پہنچانا چاہی اور نہ ہی کبھی ایسا جان بوجھ کے کچھ کیا ۔
وہ آئلہ کے بالوں میں انگلیاں چلاتے ہوئے دھیرے سے کہہ رہا تھا جبکہ آئلہ نہ سمجھنے والے انداز میں احان کے چہرے کو تکے جا رہی تھی وہ سمجھ نہیں پا رہی تھی کہ احان کیا کہہ رہا ہے اور وہ کیا کہنا چاہتا ہے ۔
آپ کیا کہہ رہے ہیں مسٹر احان؟ میں کچھ سمجھ نہیں پا رہی ۔ آپ ایسی باتیں کیوں کررہے ہیں مجھے کچھ بھی سمجھ نہیں آرہا مجھے کچھ بھی نہیں سننا ۔
آپ پلیز یہاں سے چلیں مجھے یہاں بالکل بھی اچھا نہیں لگ رہا ہے مجھے یہاں نہیں رہنا آپ واپس چلیں ۔
وہ احان کا ہاتھ تھامے کہنے لگی ۔
ہاں ہم واپس چلے گئے لیکن ساری سچائی جاننے کے بعد ۔میں آج آپ کو ایک ایک بات بتانا چاہتا ہوں ہر وہ بات جو میں نے آپ سے چھپائی وہ سب کچھ جو آپ نہیں جانتی آپ کا جاننا ضروری ہے ۔
احان نے نظریں جھکا تے ہوئے کہا ۔Mr. Psycho part 50 & 51
کون سا سچ ہے ؟ کون سی باتیں ؟میں کیا نہیں جانتی ؟آپ یہ سب کیا کہہ رہے ہیں؟ مجھے کچھ سمجھ نہیں آرہا۔ مجھے کچھ بھی نہیں جاننا مسٹر احان۔ پلیز آپ چلیں یہاں سے یہاں پہ مجھے ڈر لگ رہا ہے ۔
وہ احان کا بازو تھامے اسے اٹھانے کے سے انداز میں کہتے ہوئے بولی ۔
جانم! میری ہنی! ہم نہیں جا سکتے میں نے آپ سے کہا نا آپ کا یہ سب جاننا بہت ضروری ہے پلیز آپ ایک دفعہ میری بات سن لیں کہ میں کیا کہنا چاہ رہا ہوں پھر ہم چلیں گے یہاں سے ۔
احان نے آئلہ کے گال سہلاتے کہا ۔
نہیں مجھے کچھ نہیں جاننا ابھی۔ سب سے پہلے یہاں سے چلیں۔ آپ کو سمجھ کیوں نہیں آرہی مسٹر احان مجھے بہت ڈر لگ رہا ہے پلیز چلیں یہاں سے ۔Mr. Psycho part 50 & 51
وہ رونے لگی ۔ احان نے ایک نظر اسے دیکھا اس کے آنسوؤں کو صاف کرتے اسے اپنے سینے سے لگایا ۔
جو میں آپ کو بتانے جارہا ہوں اسے سننے کے بعد شاید آپ کو مجھ سے بھی ڈر لگے گا ۔پر میں کیا کروں اگر آپ کو نہیں بتاؤں گا تو شاید آپ کو کھو دوں اور اگر آپ کو بتا دیا تو شاید پھر بھی آپ کو کھو دوں ۔ میں نہیں جانتا کہ آپ کیا کہیں گی آپ کیا فیصلہ کریں گی جو بھی ہوگا میں اس کو بھگتنے کے لئے تیار ہوں لیکن میں مزید یہ سب کچھ چھپا نہیں سکتا کیونکہ اب بات آپکی خوشی کی اور محبت کی ہے، اب بات ہمارے درمیان اعتبار اور ہمارے رشتے کی ہے۔
احان نے اسے اپنے سینے سے لگاتے اس کے کان کے قریب ہوتے ہلکی سی آواز میں کہا ۔
آپ کیا بتانا چاہتے ہیں مسٹر احان؟ ایسی کیا بات ہے جو آپ اتنے پریشان ہو رہے ہیں؟ جو آپ مجھے کمرے میں بند کرکے چلے گئے آخر ایسا کیا ہے آپ نے مجھ سے کون سی باتیں چھپائی ہوئی ہیں؟
آئلہ نے احان کی آنکھوں میں جھانکتے ہوئے سوال کیا ایک پل کو احان کو اپنے دل کی دھڑکنیں رکتی ہوئی محسوس ہوئیں تھیں ۔ وہ عجیب سی کشمکش کا شکار ہو رہا تھا۔ اسے سمجھ نہیں آرہا تھا کہ آئلہ کی آنکھوں میں اپنے لیے محبت دیکھ کے اس کا دل بے ایمان ہو رہا تھا ۔لیکن اگر وہ نہیں بتاتا تو اس کا ہی نقصان ہونے والا تھا کیونکہ پھر رمیز نے سب کچھ بتا دینا تھا اور شاید آئلہ پھر اس پر کبھی اعتبار نہ کر پاتی اس لئے جو بھی ہو جائے اسے بتانا تو تھا ہی ۔
جو میں نے آپ کو بولا تھا کہ وہ بچہ میرا نہیں ہے ۔۔۔۔Mr. Psycho part 50 & 51
وہ۔۔۔۔۔۔وہ بچہ میرا ہے میں نے آپ سے جھوٹ بولا تھا لینا اور میرا بچہ تھا وہ ۔ میرا ایسا کوئی ارادہ نہیں تھا مجھے نہیں پتہ کہ لینا نے یہ سب کیسے کیا، اس نے یہ بات مجھ سے چھپائی تھی۔ میں بس اتنا جانتا ہوں کہ وہ بچہ میرا ہی ہے ۔
پلیز مجھے اس کے لئے معاف کر دیں میں بہت شرمندہ ہوں لیکن میں ڈر گیا تھا کہ کہیں آپ یہ سب جان کے مجھے چھوڑ کے چلی جائیں گی اس وجہ سے آپ کو یہ بات نہیں بتائی اور ویسے بھی وہ چھوٹا سا بچہ ہے وہ ہمارے درمیان نہیں آئے گا کبھی۔ میں بس آپ سے محبت کرتا ہوں میرے لیے سب سے اہم صرف آپ ہی ہیں اور کوئی بھی نہیں ۔
احان نے نظریں چراتے ہوئے کہا ۔
اب کیا فائدہ بتانے کا اب تو لینا بھی نہیں رہی وہ بچہ آپ کا ہے یا نہیں ہے مجھے اس بات سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔اگر آپ نے مجھے نہیں بتایا تو اب اس بات کو لے کے کوئی لڑائی نہیں کریں گے ہم۔ آپ نے نظریں کیوں جھکائی ہوئی ہیں آپ ایسے بالکل بھی اچھے نہیں لگ رہے ہیں۔Mr. Psycho part 50 & 51
آپ تو بہت ڈیشنگ ہیں۔ آپ مجھ سے آنکھیں ملا کے بات کریں آپ میرے مسٹر احان ہیں۔ سنا آپ میرے مسٹر احان ہیں ایک ڈیشنگ پرسنیلٹی۔ آپ ایسے نظریں چراتے ہوئے بالکل بھی اچھیے نہیں لگ رہے ہیں ۔
وہ احان کے چہرے کو اپنے چھوٹے سے ہاتھوں میں بھرتے ہوئے بول رہی تھی اس کی بات سن کر احان کو اس پہ بے حد پیار آ رہا تھا۔ احان کے عنابی لبوں پہ ایک گہری دلفریب مسکراہٹ پھیلی تھی۔ جسے دیکھ کے آئلہ بھی مسکرانے لگی ۔
اب اچھے لگ رہے ہیں آپ۔ آپ کے چہرے پر مسکراہٹ اچھی لگتی ہے آپ ایسے لگتے ہیں بہت ہینڈسم ۔
آئلہ نے احان کے گال کو کھینچتے ہوئے کہا ۔
صرف یہ بات نہیں ہے جانم کچھ اور بھی ہے جو آپ نہیں جانتیں ۔
احان نے آئلہ کو اپنے قریب کرتے ہوئے سرگوشی کے سے انداز میں کہا ۔
اور کیا ہے جو میں نہیں جانتی مسٹر احان؟ آپ بتائیں مجھے جو بھی بات ہے آپ پلیز مجھے صاف صاف بتا دیں بول دیں سب کچھ ۔
وہ احان کی گود میں بیٹھتے ہوئے، اس کے کندھے پر سر رکھتے اس کی گردن کے گرد بانہوں کا گھیرا بناتے ہوئے بول رہی تھی ۔
مجھے سمجھ نہیں آرہی آپ کو بتاؤں یا نہیں ۔
یہ جان کے آپ کو بہت تکلیف ہو گی اور میں نہیں چاہتا کہ آپ کو تکلیف ہو لیکن میں کیا کروں آپ نے ضد کی ہوئی ہے اگر آپ کو نہیں بتاؤں گا تو شاید آپ سمجھ نہیں پائیں گی اس لیے آپ کو بتانا ضروری ہے تاکہ آپ سمجھیں آپ خود کو اکیلا مت سمجھیے گا اس دنیا میں میں ہوں آپ کا سب کچھ، آپ کا خیال رکھنے کے لئے، آپ سے محبت کرنے کے لئے اور ضرورت پڑی تو آپ کے لیے جان بھی دینے کے لیے ۔Mr. Psycho part 50 & 51
وہ آئلہ کی کمر کو اپنی بانہوں کے حصار میں لیتے اس کے کان میں سرگوشی کررہا تھا ۔
آپ کے مام، ڈیڈ آپ سے کوئی رابطہ نہیں رکھنا چاہتے ۔ اس لیے انہوں نے کبھی بھی آپ سے ملنے کر نہیں پوچھا نہ کوئی کال کی اور نہ ہی آپ کے ڈیڈ نے مجھے کبھی کال کی میں نے جو آپ سے بولا تھا وہ صرف آپ کا دل بہلانے کے لیے کہاتھا ہنی ۔
آپ کے ڈیڈ نے ایک ڈیل کی تھی اور اس ڈیل کے بدلے انہوں نے آپ کو میرے حوالے کیا تھا میں یہ آپ کو کبھی بھی نہیں بتانا چاہتا تھا لیکن آپ بار بار وہاں جانے کی ضد کر رہی ہیں اس لئے مجبوراً مجھے بتانا پڑ رہا ہے میں نے کافی بار کوشش کی ان سے رابطہ کرنے کی انہیں سمجھایا کہ آپ کو اس بارے میں بتائے بنا وہ آپ سے رابطہ رکھیں اور ملتے رہیں لیکن انہوں نے صاف منع کردیا اور کہا کہ ان کا کوئی تعلق نہیں ہے آپ سے اسی وجہ سے میں آپ کو منع کر رہا تھا ۔Mr. Psycho part 50 & 51
آپ کی جب کڈنیپنگ ہوئی تھی اور جب آپ ہاسپٹل میں ایڈمٹ تھی تو میں نے آپ کے ڈیڈ سے رابطہ کیا تھا میں نے انہیں آپ کے بارے میں بتایا تھا میں نے بہت منتیں کیں تھیں ان کی ان سے کہا تھا کہ ایک دفعہ آپ سے آ کے مل لیں لیکن انہوں نے صاف منع کر دیا تھا انہوں نے کہا کہ اب ان کا کوئی تعلق نہیں ہے پھر چاہے آئلہ جیے یا مرے انہیں کوئی فرق نہیں پڑتا ۔
میں آپ کو کبھی بھی یہ بات نہیں بتانا چاہتا تھا پر مجبور ہوگیا ہوں جانم۔ مجھے آپ کو یہ سب بتانا پڑ رہا ہے ورنہ شاید آپ مجھے غلط سمجھنے لگ گئی تھی آپ سمجھنے لگی تھی کہ شاید میں آپ سے جھوٹ بول رہا ہوں اور آپ کے مام، ڈیڈ سے آپ کو ملنے نہیں دے رہا پر دراصل وہ میں نہیں ہوں وہ آپ کی فیملی ہے جو آپ سے ملنا نہیں چاہتی اس لیے پلیز آپ میرے بارے میں کوئی بھی غلط فہمی مت پالیں آپ کے دل میں مجھے لے کہ جو بھی شک ہے جو بھی بات ہے پلیز انہیں کلیئر کرلیں ۔
میں آپ سے بہت محبت کرتا ہوں بے حد خود سے بھی زیادہ، مجھے نہیں پتہ کہ میں آپ کو کیسے یقین دلاؤں گا پر میں اتنا جانتا ہوں کہ آپ کے لیے میں کچھ بھی کر سکتا ہوں کچھ بھی کر سکتا ہوں ۔
وہ آئلہ کو خود میں بھینچے سرگوشی کر رہا تھا ۔
سو میرے ڈیڈ نے ۔۔۔۔۔مطلب مجھے بیچا تھا مطلب آپ نے مجھے پیسوں سے خریدا تھا تو آپ نے پیسے دیئے ہیں میرے، مطلب میں آپ کے غلام ہوں اسی لیے ڈیڈ مجھ سے کوئی رابطہ نہیں رکھ رہے تھے ۔
جب آپ نے مجھے پیسوں سے خریدا ہے تو آپ کو مجھ سے پیار کیسے ہو گیا یہ تو مجھے جھوٹ لگ رہا ہے آپ نے مجھے خریدہ کیوں؟ کس لیے ؟ بتائیں ؟Mr. Psycho part 50 & 51
وہ احان کے چہرے کی طرف دیکھتے رنجیدہ انداز میں پوچھ رہی تھی اس کے چہرے سے دکھ واضح ہو رہا تھا آنکھیں پانی سے بھر چکی تھی اور وہ بھی یقینی سے یہ احان کو دیکھے جا رہی تھی ۔
نہیں جانم، پلیز ایسا مت بولیں یہ کیسی باتیں کر رہی ہیں آپ۔ میں نے آپ کو خریدا نہیں ہے میں نے تو صرف آپ کو بچانے کے لیے کیا تھا یہ سب ۔ اس کے پیچھے کوئی وجہ کوئی بھی مقصد نہیں تھا میرا۔
میرا یقین کریں میری نیت میں کوئی بھی کھوٹ نہیں تھا میرا ایسا کوئی بھی غلط ارادہ نہیں تھا ۔
وہ آئلہ کے ماتھے کو چومتے ہوئے اسے یقین دلانے کے انداز میں کہنے لگا ۔
تو پھر آپ نے کیوں خریدا مجھے اگر کوئی بھی مقصد نہیں تھا؟ تو پھر آپ نے ایسا کیوں کیا اگر آپ کی کوئی غلط نیت نہیں تھی کوئی غلط ارادہ نہیں تھا تو آپ نے مجھے بتایا کیوں نہیں؟ آپ نے اتنے مہینے یہ چھپا کے رکھا ۔ ہاں میں سمجھ گئی آپ نے یہ سب اسی لئے نہیں بتایا نا کیونکہ پہلے آپ مجھے اپنا دوست بنانا چاہتے تھے اور آپ چاہتے تھے کہ مجھے آپ سے پیار ہو جائے تاکہ پھر میں آپ سے دور نہ جا سکوں کیونکہ مجھے آپکی عادت ہو جائے گی۔ ہیں نا اس لئے کیا نہ آپ نے ؟ یہ سب پلان کیا تھا۔ ہاں بالکل یہ ساری پلاننگ تھی آپ کی کیونکہ میں بہت بے وقوف ہوں نا مجھے تو کچھ بھی پتہ نہیں چلتا آپ مجھ سے پیار نہیں کرتے آپ مجھے یہ سب کیوں بتا رہے ہیں اب؟ آپ کو مجھے یہ سب بتانے کی ضرورت نہیں ہے جب آپ نے مجھے خریدا ہی ہے تو آپ مجھے بتا دیتے ہیں مسٹر احان پھر بس آپ کا حکم مانتی میں۔ اپنی مرضی نہیں بتاتی کبھی آپ کو کیونکہ میرے گھر والوں نے تو مجھے بیچ دیا تو پھر میں اب ہوں ہی کیا ؟ کچھ بھی نہیں ہوں میں کسی کے لیے بھی۔Mr. Psycho part 50 & 51
ٹھیک ہے آپ نے مجھے یہ سب بتا دیا بہت شکریہ آپ کا ۔
آپ جیسا کہیں گے میں ویسا ہی کروں گی ۔اب کے بعد کبھی بھی اپنے مام،ڈیڈ کے پاس جانے کی بات نہیں کروں گی ۔
ایم سوری آپ مجھے معاف کر دیں جو میں نے اپنی ضد میں آپ کو اتنا پریشان کیا کہ آپ کو مجھے کمرے میں بند کرنا پڑا ۔
میں دوبارہ ایسا کوئی بھی کام نہیں کروں گی کہ آپ کو مجھے کمرے میں بند کرنا پڑے ۔ میں آپ سے کچھ بھی نہیں کہوں گی کہ آپ کو غصہ ہے یا آپ کو برا لگے ۔
وہ فرش کو تکتے ہوئے کھوئے ہوئے انداز میں بولے جا رہی تھی ۔احان کا دل کرچی کرچی ہوا تھا ۔ اس کی آنکھوں میں نمی اتر آئی تھی ۔ اس نے سختی سے آنکھیں بند کر کیں اور ایک گہرا سانس لے کے آئلہ کو دیکھنے لگا ۔
یہ کیسی باتیں کر رہی ہیں؟ میں نے کہا نا میں نے آپ کو نہیں خریدا میری غلام نہیں ہیں آپ ۔ آپ میری وائف ہیں میری ہنی بنی میری جانم میری بیسٹ فرینڈ میرا سب کچھ ہیں آپ ۔
آپ جو چاہے کہہ سکتی ہیں مجھے ۔ میں نے کبھی آپ کی بات کا برا نہیں مانا کبھی بھی آپ کی بات کسی بات پہ آپ کو غصہ نہیں کیا ۔ بس اس بات پر میں مجبور ہوگیا تھا یہ کچھ ایسا تھا کہ آپ کو بتائے بغیر رہا نہیں جا رہا تھا اور آپ کی ضد کے آگے مجھے گھٹنے ٹیکنے پڑے اور آپ کو بتانا ہی بڑا سچ ۔
آپ پلیز ایسی باتیں مت کریں ۔Mr. Psycho part 50 & 51
وہ نرمی سے آئلہ کے گال چھوتے ہوئے کہنے لگا ۔
قسط_۵۱
مجھے آپ کی کوئی بات نہیں سننی ۔ میں جانتی تھی کہ وہ مجھ سے پیار نہیں کرتے لیکن مجھے بالکل بھی اندازہ نہیں تھا کہ وہ مجھے پیسوں کی خاطر بیچ دیں گے ۔
وہ ایسا کیسے کر سکتے ہیں میرے ساتھ آخر کیسے انہوں نے ایک بار بھی نہیں سوچا کیا اتنا تنگ تھے مجھ سے؟
تو مجھے پیدا ہی کیوں کیا تھا انہوں نے شاید میں ان کی غلطی تھی اور اب غلطی کو واپس سدھار چکے ہیں ۔ میں ان کے لئے کوئی معنی نہیں رکھتی یہ بہت افسوس کی بات ہے بے حد دکھ کی بات ہے یہ ۔ مجھے بہت برا لگ رہا ہے ۔
اس کی آنکھوں سے آنسو بہتے ہوئے اس کے گال پہ پھسلتے جارہے تھے ۔ایحان اپنی انگلیوں سے اس کے گال سے آنسو صاف کر رہا تھا ۔اور اسے چپ کرانے کی کوشش کر رہا تھا ۔
روئیں نہیں چپ ہو جائیں میں ہوں نا آپ کے ساتھ آپ کیوں رو رہی ہیں پلیز جانم اپنے آنسو ضائع مت کریں ۔
ادھر دیکھیں، میری طرف دیکھیں ہنی، چپ ہو جائیں بس، بس چپ ہو جائیں ۔
میں ہوں آپ سے بے حد پیار کرنے کے لئے، میں ہوں آپ کے لیے، میں ہوں یہاں آپ کے ساتھ، میں آپ کو سب سے زیادہ چاہتا ہوں ۔
وہ اس کے آنسو صاف کرتے اسے اپنے سینے سے لگاتے پیار سے بولنے لگا ۔
اس کے سینے میں چھتے وہ رونے لگی ۔
کیوں رو رہی ہیں پلیز چپ ہو جائیں ناہنی ۔ وہ آئلہ کے بالوں میں انگلیاں چلاتے ہوئے پیار سے بولا۔ آئلہ اٹھتے ہوئے جا کر بیڈ پر بیٹھ گئی ۔احان بھی اس کے پیچھے اٹھتے اس کے پاس جا بیٹھا ۔
ہنی پلیز چپ ہو جائیں ۔احان نے آئلہ کی طرف ہاتھ بڑھاتے کہا تو آئلہ نے اس کے ہاتھ زور سے دور جھٹکا ۔
مجھے ہاتھ لگانے کی ضرورت نہیں ہے آپ کو ۔اب جائیں یہاں سے اور بند کردیں مجھے ویسے ہی جیسے پہلے کمرے میں بند کرکے گئے تھے اب دوبارہ سے کمرہ بند کر کے چلے جائیں یہاں سے ۔
وہ روتے ہوئے بولی ۔Mr. Psycho part 50 & 51
میں جانتا ہوں کہ آپ کو مجھ پر بہت غصہ ہے آپ بہت ناراض ہے آپ کا پورا حق بنتا ہے مجھ پر غصہ کرنے کا ۔
آپ ڈانٹیں مجھے غصہ کر لے چیخیں چلائیں لیکن پلیز اس طرح روئیں نہیں میں آپ کو روتے ہوئے نہیں دیکھ سکتا ۔
پلیز چپ ہو جائیں ہنی ۔
احان بیڈ کے ساتھ بڑے کاؤچ پر بیٹھتے ہوئے دھیمی سی آواز میں بولا ۔
نہیں مجھے کوئی غصہ نہیں کرنا مجھے نہیں کہنا کچھ بھی آپ کو اب یہاں سے چلے جائیں ۔
وہ دونوں گھٹنوں کے بیچ سر رکھے آنسو بہائے جا رہی تھی ۔ وہ اس وقت بالکل بھی اس حالت میں نہیں تھی کہ احان کی کسی بھی بات پہ بھروسہ کریں وہ بے یقینی کے عالم میں بس روئے جارہی تھیں اپنے مام ڈیڈ کو تو وہ جانتی تھی اس لئے اس بات کا زیادہ دکھ نہیں تھا لیکن احان وہ ایسا کیسے کر سکتا ہے یہ بات اس کو دکھ پہنچا رہی تھی ۔
احان جانتا تھا کہ وہ اس وقت بہت تکلیف میں ہے اسے بہت برا لگ رہا تھا اس کی آنسو اسے اپنے دل پہ گرتے ہوئے محسوس ہو رہے تھے پر وہ کیا کرتا اس کے علاوہ اور کوئی راستہ بھی نہیں تھا مزید زیادہ دن تک وہ چھپا بھی نہیں سکتا تھا آج نہیں تو کل تو اسے بتانا ہی تھا یہ سب اور اگر نہ بتاتا تورمیز نے سب کچھ بتا دینا تھا ۔
وہ اپنے بال نوچتے سرجھکائے سوچے جا رہا تھا ۔
سائڈ ٹیبل سے پانی کا گلاس اٹھاتے ہوئے وہ اٹھ کے آئلہ کی طرف بڑھا ۔
یہ لیں ہنی پانی پی لیں پلیز، چپ ہو جائیں رونا بند کریں میری طرف دیکھیں ۔وہ آئلہ کے کندھے پر ہاتھ رکھے اسے کہنے لگا ۔
مجھے نہیں پینا پانی مجھے آپ سے بات نہیں کرنی آپ جائیں یہاں سے ۔
وہ سسکیوں میں روتے ہوئے بولنے لگی۔
چپ ہو جائیں نہ پلیز! آپ کے آنسو برداشت نہیں ہورہے مجھ سے ۔ آپ مجھے جو بھی سزا دینا چاہیے دے دیں لیکن پلیز اس طرح روئیں نہیں مجھے بہت تکلیف ہو رہی ہے جانم ۔
احان سائیڈ ٹیبل پر گلاس واپس رکھتے ہوئے آئلہ کے قریب بیٹھتے ہوئے رنجیدہ لہجے میں بولا ۔
آپ کو کیوں تکلیف ہو رہی ہے ۔ آپ کو تو خوش ہونا چاہیے نا ۔ مجھے آپ کی باتوں پر یقین نہیں ہو رہا اب ۔ مجھے آپ بہت برے لگ رہے ہیں ۔میں آپ کی شکل نہیں دیکھنا چاہتی میں آپ کی آواز نہیں سننا چاہتی پلیز آپ یہاں سے چلے جائیں ، چلے جائیں یہاں سے ۔
اپنے بالوں کو نوچتے وہ چیخی تھی۔Mr.PSYCHO PART 50 & 51
ادھر دیکھے میری طرف ، ہنی سنبھالیں خود کو ادھر دیکھیں پلیز ۔
احان اسے بازوؤں سے پکڑتے اپنے سینے میں بھینچتے ہوئے کہنے لگا ۔
وہ مسلسل روئے جا رہی تھی وہ اس کے بالوں میں انگلیان چلانے لگا ۔
میں جانتا ہوں کہ میرا قصور ہے اور میں معافی مانگ رہا ہوں اپنی غلطی مان رہا ہوں میری غلطی یہ ہے کہ میں نے آپ کو یہ سب نہیں بتایا جبکہ میرا کوئی بھی غلط ارادہ نہیں تھا اب میں آپ کو اس بات کا یقین کیسے دلاؤں بنی آخر کیسے آپ کو یقین دلاؤں میں ؟
میں نے صرف آپ کو بچانے کے لیے کیا تھا یہ وہ تو بعد میں آپ کے ساتھ رہ کے آپ کی ہنسی آپ کی مسکراہٹ آپ کی شرارتیں دیکھ کے مجھے آپ سے پیار ہوگیا ۔ میں آپ سے سچ میں بہت پیار کرتا ہوں میری محبت جھوٹی نہیں ہے ۔آپ پلیز میری محبت پہ ایسے شک مت کریں ۔Mr.PSYCHO PART 50 & 51
بے شک میں نے بہت غلط کام کیے بے شک میں نے بہت غلطیاں کیں لیکن میں نے آپ سے کوئی بھی جھوٹی محبت نہیں کی کوئی جھوٹا وعدہ نہیں کیا کوئی ایسی حرکت نہیں کی جس سے آپ کو تکلیف پہنچے پھر بھی نہ جانے کیوں ہر بار ہمیشہ میری کسی نے کسی غلطی کی وجہ سے آپ ہرٹ ہو جاتی ہیں۔
وہ آئلہ کے بالوں میں انگلیاں جلاتے سرگوشی کر رہا تھا ۔
آہستہ آہستہ اس کی سسکیوں کی آواز کم ہونے لگی ۔وہ ایسے ہی کافی دیر تک بیٹھا رہا ۔
ایم سوری مجھے معاف کر دیں میں جانتا ہوں آپ کو اس سے بہت تکلیف پہنچی ہے لیکن اور کوئی چارہ بھی تو نہیں تھا یہ تکلیف زیادہ دیر کے لئے نہیں ہوگی یہ کچھ دن بعد ختم ہو جائے گا ۔
مجھے آپ کو مضبوط بنانا ہوگا ۔وہ آئلہ کے بالوں میں انگلیاں گھماتے ہوئے خیالوں میں گم تھا ۔ایک نظر اس کی طرف ڈالی وہ سو چکی تھی ۔دھیرے سے اسے بیڈ پہ سیدھا کرکے لٹایا اس پہ کمفرٹر ڈالا اس کے چہرے پر آتے بالوں کی لٹوں کو ہٹاتے وہ اسے دیکھنے لگا اس کے گال ابھی بھی آنسوؤں سے بھیگے ہوئے تھے ۔
نرمی سے اس کے گالوں کو صاف کرتے اس کے ماتھے پے پیار کرتے وہ دھیرے سے بیٹھ سے اترا اور گیلری کی طرف بڑھا ۔
اپنا موبائل فون نکالا اور رمیز کو کال کی ۔
کیا ہوا سب ٹھیک ہے تم نے بتا دیا اسے ؟
رمیز نے فون کان سے لگاتے پوچھا ۔Mr.PSYCHO PART 50 & 51
ہاں میں نے بتا دیا اسے اس بچے کے بارے میں اور اس کے مام،ڈیڈ کے بارے میں بھی ۔وہ بہت دکھی ہوئی تھی وہ بہت زیادہ رو رہی تھی ۔روتے روتے سو چکی ہے ۔
مجھے بہت فکر ہو رہی ہے کہیں وہ اس بات کا بہت زیادہ سٹریس نہ لے لیں ۔ شاید مجھے نہیں بتانا چاہیے تھا اسے میں پچھتا رہا ہوں اسے بتا کے اسے اس حال میں نہیں دیکھ پا رہا ہوں میں ۔
احان نے بے بسی سے کہا ۔
نہیں تم نے بالکل ٹھیک کیا اسے بتا کے کہ اب جو بھی ہوگا ہم سنبھالیں گے تم ٹینشن نہ لو ۔ میں صبح آؤں گا تم سے ملنے تم پریشان مت ہو آئلہ کے پاس رہو ۔
فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے ہم اسے سمجھا دیں گے وہ سمجھ جائیں گی ۔ٹھیک ہے نا اوکے چلو میں فون رکھتا ہوں ۔
رمیز نے فون بند کر کے جیب میں رکھا اور کچھ سوچنے لگا ۔
احان واپس کمرے میں آتے بیڈ کی طرف بڑھا اور آئلہ کے پاس جا کے لیٹ گیا ۔
کافی دیر ایسے ہی اسے تکتا رہا ۔اور اس کے گرد بانہوں کا حصار بناتے آنکھیں بند کر گیا۔
______*******_______Mr.PSYCHO PART 50 & 51
صبح احان کی آنکھ کھلی تو بیڈ پر آئلہ کو ناپاکے وہ پریشانی سے اٹھ بیٹھا ۔ ایک پل کو جیسے اس کے ہوش گم ہوئے تھے پورے کمرے میں چاروں طرف دیکھنے کے باوجود آئلہ کہیں بھی نظر نہ آئے ۔اس کے دل کی دھڑکن بڑھنے لگی تھیں۔ ماتھے پہ پسینے کے قطرے ابھرنے لگے وہ تیزی سے بیڈ سے اترا اور ڈریسنگ روم کی طرف بڑھا لیکن وہاں بھی کوئی نہ تھا باتھروم کی طرف گیا لیکن وہاں پے بھی وہ نہ تھی وہ جلدی سے کمرے سے باہر کی طرف بھاگا ۔
وہ لاونج میں آیا ہی تھا کہ کچن سے آواز آئی تو وہ اسطرف بڑھا ۔
کچن میں داخل ہوتے ہی اسے آئلہ نظر آئی۔وہ شاید کچھ بنا رہی تھی اسے دیکھ کے احان کی جان میں جان آئی تھی۔ اس نے ایک سکون بھرا سانس لیا اور دھیرے سے کچن میں داخل ہوگیا ۔Mr.PSYCHO PART 50 & 51
جانم آپ یہاں کیا کر رہی ہیں صبح صبح ۔ کیا بنا رہی ہیں کچھ چاہیے تھا آپ کو مجھے بتائیں ۔
وہ آئلہ کے قریب آتے اس سے پوچھنے لگا ۔
مجھے بھوک لگ رہی تھی ناشتہ بنا رہی ہوں۔
دھیمی سی آواز میں احان کی طرف دیکھے بغیر بولی وہ۔
اس کی ضرورت نہیں ہے ابھی تھوڑی دیر میں میری بین آ جائے گی وہ بنا دے گی آپ کو جو کھانا ہے ہٹ جائیں اگر آپ کو بھوک لگی ہے تو میں آپ کو بنا کے دیتا ہوں۔ آپ کچھ مت کریں کہیں آپ کا ہاتھ نہ جل جائے آپ کو تو نہیں آتا کچھ بنانا۔
وہ آئلہ کا بازو پکڑ کر اسے اپنی طرف کر کے کہنے لگا ۔
کوئی بات نہیں میں سیکھ لوں گی ۔
وہ نظر جھکا کے بولی ۔Mr.PSYCHO PART 50 & 51
احان نے اس کی تھوڑی کو شہادت کی انگلی سے اوپر کی طرف کیا اور اس کی آنکھوں میں جھانکنے لگا ۔
آپ کو ضرورت نہیں ہے سیکھنے کی کوئی ضرورت نہیں اتنی محنت کرنے کی ۔
میں ہوں نہ میں بنا لوں گا بتائیں کیا کھانا ہے آپ کو آملیٹ گی؟ بریڈ جیم یا فریش جوس پئیں گی؟ چلیں جلدی سے بتائیں مجھے جو بھی ناشتہ کرنا ہے آپ کو میں آپ کو بنا کر دوں گا ۔
وہ آئلہ کے گال پر پیار کرتے مسکراتے ہوئے بولا ۔
نہیں میں خود بنا لوں گی۔Mr. Psycho part 50 & 51
وہ سپاٹ سے لہجے میں بولی تو احان اسے دیکھنے لگا ۔
کیا ہوا ہنی؟ ادھر دیکھیں میری طرف بتائیں مجھے ۔
آئلہ کے چہرے کو اپنے ہاتھوں کے پیالے میں بھرتے ہویے وہ محبت سے بولا ۔
میں نے کہا نہ آپ کو یہ سب کرنے کی ضرورت نہیں ہے آپ میری ہنی ہیں، میری چھوٹی سی جانم، میں ہوں آپ کا خیال رکھنے کے لیے۔
چلیں اب سائیڈ پہ ہو جائیں ہنی، میں آپکے لیے ناشتہ بناتا ہون۔
آئلہ کو سائیڈ پر کرتے وہ آملیٹ بنانے لگا ۔وہ چپ چاپ سائیڈ پہ کھڑی اسے دیکھتی رہی ۔
میں جانتا ہوں آپ ناراض ہیں ۔میں یہ بھی جانتا ہوں کہ آپ بہت دکھی ہیں میں سمجھ سکتا ہوں آپ کے لیے یہ آسان نہیں اس بات کا یقین کرنا۔ میں نے بہت غلطیاں کی ہیں اور میں بہت شرمندہ ہوں ان سب کے لئے لیکن پلیز آپ کچھ بھی کہہ لیں میری محبت بے شک مت کیجئے گا کیونکہ میری محبت سچی ہے ۔
میں کچھ بھی کر سکتا ہوں لیکن کبھی بھی اپنی جانم کو دھوکا نہیں دے سکتا ۔
آپ کو اتنا تو یقین ہے نا اپنے مسٹر احان پے ؟Mr. Psycho part 50 & 51
احان نے اسے سوالیہ نظروں سے دیکھا تو وہ نظریں جھکاتے فرش کو تکنے لگی۔ احان نے افسردگی سے اسے دیکھا تھا۔

By barbie boo

Hey! I'm Barbie a novelist. I'm a young girl with a ROMANTIC soul. I love to express my feelings by writing.

Leave a Reply

Your email address will not be published.