couple, love, together-498484.jpg

written by barbie boo

Mr.Psycho part 52 & 53. This novel is based on age difference couple who fell in love with each other.

ناول____ مسٹر سائکو
رائٹر ____باربی بو
قسط_____ 53,52
آپ ڈائننگ ٹیبل پہ جائیں میں ناشتہ لے کے آتا ہوں ۔
احان نے آئلہ کی طرف دیکھتے ہوئے نرمی سے کہا تو وہ ایک نظر احان پر ڈالتے کچن سے باہر چلی گئی ۔
پتا نہیں کب یہ سب ٹھیک ہو گا آپ پریشان نہ ہوں۔ میں زیادہ دیر تک آپ کو ناراض نہیں رہنے دوں گا۔
وہ آملیٹ بناتے ہوئے دھیرے سے بولا ۔
وہ ناشتے کی ٹرے لے کے کچن سے باہر نکلا اور ڈائننگ ٹیبل کی طرف بڑھ گیا ۔
یہ رہا آپ کا ناشتہ ہنی۔
ناشتے کی ٹرے کو آئلہ کے سامنے ٹیبل پر رکھتے ہوئے احان پیار سے بولا ۔
تھینک یو ۔Mr.psycho part 52 & 53
وہ دھیرے سے کہتے ناشتہ کرنے لگی ۔
وہ اس کے برابر پڑی کرسی پہ بیٹھ گیا اور اسے دیکھنے لگا ۔
آپ ٹھیک ہیں نا ؟ وہ آئلہ پہ نظر ڈالتے پوچھ رہا تھا ۔
آئلہ نے کوئی جواب نہ دیا اور وہ ناشتہ کرتی رہی ۔
کیا آپ مجھ سے بات نہیں کریں گی ایسے ہی ناراض رہیں گی؟ روٹھی رہیں گی مجھ سے ؟ میری طرف دیکھیں گی بھی نہیں کیا ؟
اس نے آئلہ کے ہاتھ پر نرمی سے اپنا ہاتھ پھیرتے کہا ۔
اس سے کیا فرق پڑتا ہے؟ آپ کو میری فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے اور میں آپ سے ناراض نہیں ہوں آپ کو اتنے پیار سے بات کرنے کی ضرورت نہیں ہے مجھ سے۔ میں ٹھیک ہوں ۔
وہ احان کے ہاتھ سے اپنا ہاتھ چھڑا تے ہوئے
دھیمی آواز میں بول رہی تھی ۔
دیکھیں ہنی جو بھی ہوا وہ اچھا نہیں ہوا لیکن اب اس اس کے بارے میں سوچ کے اداس ہوکے خود کو دکھی کر کے رو کے کچھ بھی نہیں ہونے والا تو بہتر ہے کہ آپ اس سب کو اپنے ذہن سے نکال دیں اور بھولنے کی کوشش کریں ۔
دیکھیں میں ہوں آپ کے ساتھ آپ کو کبھی بھی کسی بھی چیز کی کمی محسوس نہیں ہونے دوں گا ۔
آپ ایسے اداس مت ہوں مجھے بالکل بھی اچھا نہیں لگ رہا آپ کو ایسے دیکھ کے آپ مسکراتی ہوئی ہنستی کھیلتی اچھی لگتی ہیں شرارتیں کرتے ہوئے ۔
آپ سن رہی ہیں نا میری بات ؟
وہ آئلہ کے گال کو نرمی سے چھوتے ہوئے پیار سے کہہ رہا تھا تو اس نے ہلکے سے ہاں میں سر ہلایا ۔
ویری گڈ! میری ہنی بہت بہادر ھے ۔ اپ نے کمزور نہیں پڑنا اوکے ۔
میری چھوٹی سی ہنی، بہت پیاری اور بہت زیادہ بہادر ہے ۔
چلیں اب ایسا کریں آپ ناشتہ کر لیں پھر ہم واپس گھر چلتے ہیں ۔ وہ چھوٹا بےبی آپ کو مس کررہا ہوگا۔ آپ کو اس کے ساتھ کھیلنے کا دل چاہ رہا ہوگا نا۔Mr.psycho part 52 & 53
وہ مسکراتے ہوئے بولا ۔ وہ ترچھی نظرون سے احان کو دیکھتے نظریں جھکا گئی ۔
کیا ہوا کچھ بولیں گی نہیں؟ آپ نے مس نہیں کیا کیا اس کو ۔ چلیں کوئی نہیں آئی ایم شور کہ اس نے آپ کو ضرور مس کیا ہوگا ۔
وہ آئلہ کے گال پہ چٹکی بھرتے ہوئے بولا ۔
اسی پل رمیز لاؤنج میں آتے ان کی طرف بڑھا ۔
گڈ مارننگ کیسے تم دونوں؟ میرے بغیر ہی ناشتہ ہو رہا ہے ۔ چلیں کوئی نہیں اب میں آگیا ہوں تو مل کے ناشتہ کرتے ہیں ۔
رمیز مسکراتے ہوئے چیئر پر بیٹھے ہوئے بولا ۔ آئلہ نے خفگی سے رمیز کی طرف دیکھا تو رمیز نے نظریں چرا لیں ۔
کیا ہوا کہاں جارہی ہیں آپ ہنی؟ ناشتہ تو کرلیں۔
آئلہ کو اٹھ کے جاتا دیکھ کے احان نے اس کا ہاتھ پکڑتے ہوئے اس سے پوچھا ۔کوئی جواب دیئے بغیر اسکے ہاتھ سے اپنا ہاتھ چھڑا تے وہ وہاں سے نکلتے کمرے میں چلی گئی ۔
کیا ابھی تک ناراض ہے؟ تم نے اس کو سمجھانے کی کوشش نہیں کی کیا ؟
رمیز نے احان کو سوالیہ نظروں سے دیکھتے ہوئے کہا ۔
کیسے سمجھاؤں کچھ؟ ابھی رات کی ہی تو بات ہے اور وہ بہت ناراض لگ رہی ہے شاید مجھ سے بات نہیں کرنا چاہتی۔ وہ تو شاید میری شکل بھی نہیں دیکھنا چاہتی مجھے آئلہ کی فکر ہو رہی ہے اس کے بات نہ کرنے سے مجھے بہت بے چینی ہو رہی ہے ۔
اب تم ہی بتاؤ میں نے سب کچھ بتا دیا اسے اب کیا کروں کیسے سنبھالوں اس سب کو ۔
میں زیادہ دیر تک یہ سب برداشت نہیں کر سکتا میں زیادہ دیر تک اس کو اس طرح اداس نہیں دیکھ سکتا مجھے جلد ہی اس کو نارمل حالت میں لانا ہوگا ۔بتاؤ تم کیا کرو ں؟
احان رمیز کو سوالیہ نظروں سے دیکھتے ہوئے بولا ۔
اس کا خیال رکھو اس کے آس پاس رہو بس ۔ اس کو اپنی محبت سے یقین دلاؤ کہ تم ہمیشہ اس کے ساتھ ہو۔ وہ بہت نادان ہے تم اسے پیار سے سمجھاؤں گے تو ہر بات سمجھ جائیگی تھوڑی سے ناراض ہے دکھی ہے کوئی بات نہیں تم اسے مناؤ وہ مان جائے گی ۔
رمیز نے مسکراتے ہوئے کہا ۔Mr.psycho part 52 & 53
بات کرے گی تو مانے گی نا۔ نہ کسی بات کا جواب دے رہی نہ میری طرف دیکھ رہی ہے مناؤں بھی تو کیسے ؟مجھے یہ سب پہلی بار بہت مشکل لگ رہا ہے مجھے ڈر ہے کہ کہیں میری باتیں سن کے وہ اور نہ مجھ سے بیزار ہو جائے ۔
بس اسی لئے مجھے فکر ہو رہی ہے ۔
وہ پریشانی کے عالم میں بولا تو رمیز اسے دیکھنے لگا ۔
اگر اتنی ہی پروا تھی اسکی اتنی فکر تھی تو تم نے یہ سب کیا ہی کیوں تم نے یہ سب کچھ چھپایا ہی کیوں اس سے ؟
اب جو بھی ہونا تھا وہ ہو چکا ہے بہتر ہے کہ تم اس کو سدھارنے کی کوشش کرو ۔
اسے منانے کی کوشش کرو وہ مان جائے گی اور بس پھر سکون سے زندگی گزارنا اور بہتر ہے کہ دوبارہ ایسا کچھ بھی مت کرنا ۔
رمیز نے پانی پیتے ہوئے آرام سے کہا ۔
ہاں تم ٹھیک کہہ رہے ہو میں اگین ایسا کچھ بھی نہیں کروں گا۔ جس سے مزید ہمارے درمیان کوئی غلط فہمی پیدا ہو ۔
وہ ہلکے سے مسکراتے ہوئے بولا ۔
تو پھر میں جا کے بات کروں ؟ ہو سکتا ہے تمہاری کوئی مدد ہوجائے ؟
رمیز نے احان کی طرف دیکھتے ہوئے کہا ۔
ہاں جاؤ تم بات کر کے دیکھو ۔ ہو سکتا ہے وہ کچھ سمجھ جائیں ۔
اس کی بات سنتے ہی رمیز چیئر سے اٹھا اور آئلہ کے کمرے کی طرف چلا گیا ۔
کیا میں اندر آ سکتا ہوں ؟ وہ دروازے میں سے کمرے میں جھانکتے ہوئے بولا ۔
آئلہ نے ہاں میں سر ہلایا تو وہ کمرے میں داخل ہوگیا ۔
ہاں تو لٹل ہنی ناراض ہے ؟ بہت غصے میں لگ رہی ہے ۔
ناراض ہونا بھی چاہیے ۔ لیکن ایسے اداس اچھی نہیں لگ رہی ۔ تم نا مسکراتے ہوئے اچھی لگتی ہو ۔
وہ آئلہ کے قریب جاتے مسکراتے ہوئے بول رہا تھا وہ اسے گھورنے لگی ۔
ایسے گھورکیوں رہی ہو کیا مجھ پہ بھی غصہ ہے مجھ سے بھی ناراض ہو کیا ؟
اسے گھورتے دیکھ کے وہ معصوم شکل بناتے ہوئے بولا ۔
مجھے آپ سے بھی بات نہیں کرنی ۔Mr.psycho part 52 & 53
وہ منہ بناتے ہوئے بولی اور صوفے پر جا کر بیٹھ گئی ۔
مجھ سے بھی بات نہیں کرنی کیا؟ لیکن کیوں ؟ میں نے کیا کیا ہے مجھ سے کیوں ناراض ہو رہی ہو ہنی ۔
اس کے پیچھے جاتے وہ اسکے سامنے صوفے پر بیٹھے ہوئے بولا ۔
آپ نے بھی مجھ سے جھوٹ بولا۔ آپ نے مجھے کیوں نہیں بتایا یہ سب کچھ ؟
وہ منہ بناتے ہوئے شکوہ کرنے لگی ۔
میں اس بارے میں کچھ نہیں جانتا تھا۔ مجھے کچھ نہیں معلوم تھا اس بارے میں یہ تو کل مجھے احان نے بتایا تھا تو مجھے معلوم ہوا ۔ اگر میں کچھ بھی جانتا ہوتا تو میں ضرور تمہیں بتا دیتا ۔
رمیزنے صفائی دیتے کہا ۔
مجھے اب یقین نہیں ہے مجھے تو لگ رہا ہے اب آپ جھوٹ بول رہے ہیں اور ویسے بھی آپ مجھے کیوں بتاتے وہ تو آپ کا بیسٹ فرینڈ ہے نا ایسا کیسے ہوسکتا ہے کہ آپ کو پتہ نہ ہو آپ کو تو سب کچھ پتہ ہوتا تھا اب بھی آپ جھوٹ بول رہے ہیں مت بولیں جھوٹ مجھے بتا دے سب کچھ اچھا ۔
وہ اس کو گھورتے ہوئے بولی تو رمیز نے کندھے اچکائے ۔
مجھے سچ میں نہیں معلوم تھا ۔ تم یقین کرو ۔ اگر میں کچھ بھی جانتا ہوتا تو تمہیں بتا چکا ہوتا پہلے ہی ۔
رمیز نے اپنی تھوڑی کو اپنے ہاتھوں کا پیالہ بناتے اسمیں ٹکاتے ہوئے کہا ۔
جو بھی ہو مجھے بات نہیں کرنی ۔
وہ غصے سے منہ پھیرتے ہوئے بولی۔ رمیز کے لبوں پر ہلکی سی مسکراہٹ ابھری ۔
تم غصے میں بھی پیاری لگ رہی ہو ۔ ویسے مسکراتے ہوئے زیادہ پیاری لگتی ہو لیکن غصے میں بھی کچھ کم پیاری نہیں لگ رہی ۔ ویسے اس وقت تمہارا چہرہ بالکل لال ٹماٹر جیسا ہو رہا ہے ایک دم سرخ ۔ ویسے اور کتنی دیر تک اسے ٹماٹر بنے رہنے کا ارادہ ہے تمہارا ؟
میرا مطلب تھا کہ بس ویسے ہی پوچھ رہا ہوں ۔
رمیز نے شرارتاً کہا تو آئلہ اسے گھورنے لگی ۔
اتنے غصے سے بھی مت دیکھو مجھے تھوڑا سا ڈر لگ رہا ہے ۔
وہ ہنستے ہوئے بولا ۔۔Mr.psycho part 52 & 53
مجھ سے مذاق کرنے کی ضرورت نہیں ہے اور میں بالکل بھی موڈ میں نہیں کسی کی کوئی بھی بات سننے کے اس لیے آپ یہاں سے چلے جائیں ۔
اب کی بار وہ رونی شکل بناتے ہوئے کہنے لگی تو رمیز اٹھتے ہوئے اس کے پاس گیا ۔
میں سمجھتا ہوں آئلہ دیکھو میری بات سنو ;
جو بھی ہوا وہ بہت برا تھا لیکن آخر کب تک اس سب کو لے کے تم اداس رہو گی ایسے دکھی رہو گی ؟
آج نہیں تو کل تمہیں پتا تو چلنا تھا نا تو بہتر ہے کہ تمہیں پہلے پتہ چل گیا ۔
دیکھو تم جتنا چاہے غصہ کر لو بے شک ناراض ہو لو بات نہیں کرنی تو نہ کرو لیکن تم احان کی محبت پہ شک بلکل نہیں کرنا وہ تم سے سچ میں بے حد پیار کرتا ہے اس کا کوئی بھی غلط ارادہ نہیں تھا اس نے کچھ بھی ایسا نہیں سوچا تھا وہ بالکل سچ کہہ رہا ہے اس نے واقعی تمہیں بچانے کے لئے یہ سب کیا تھا ۔Mr.psycho part 52 & 53
اس کا کوئی پلان یا کوئی بھی ایسی غلط نیت نہیں تھی ۔
تم اس کے بارے میں کوئی بھی غلط فہمی مت پالنا اپنے دل میں ۔
وہ تمہیں تکلیف میں دیکھ کے خود بھی بے حد ٹوٹ گیا ہے وہ تمہیں کبھی بھی یہ سب نہیں بتاتا میں نے اسے کہا تھا میں نے اسے فورس کیا تھا کہ تم کو سب سچ بتا دے کیونکہ تمہارا حق تھا یہ سب جاننے کا آخر تم سے یہ سب کب تک چھپا کے رکھتا وہ۔ اس لیے اس نے تمہیں بتایا وہ تمہیں تکلیف میں دیکھے وہ خود بھی بے چین ہے۔
اگر تمہیں لگتا ہے کہ صرف تم ہرٹ ہوئی ہو تو یہ تمہاری غلط فہمی ہے تم سے کہیں زیادہ وہ ہرٹ ہوا ہے وہ اس وقت تکلیف میں ہے اذیت میں ہے وہ ۔Mr.psycho part 52 & 53
پلیز تم سمجھنے کی کوشش کرو اسے غلط مت سمجھو اس سب میں اس کا کوئی قصور نہیں ہے ۔
تم خود ایک بار سوچنے کی کوشش کرو اس میں احان کا کیا قصور ہے ۔
سوچو ایک دفعہ کوشش تو کرو یاد کرو کیا احان نے کبھی تم سے کوئی غلط بات کی کیا کبھی کچھ غلط کیا ؟کیا تم نے کبھی بھی اس کی محبت میں کوئی کمی محسوس ہوئی کیا اس نے کبھی کچھ ایسا کیا کہ تمہیں لگا کہ یہ سب جھوٹ ہے؟
اگر تمہیں کبھی بھی ایسا محسوس نہیں ہوا تو تمہیں اس پر شک کرنے کا کوئی حق نہیں بنتا ہاں تم اس سے ناراض ہو جاؤ وہ تمہیں منا لے گا اس پہ غصہ کرو اس کو ڈانٹو، اس پہ چلاؤ پر ایسے خاموش رہ کہ تم اپنے ساتھ ساتھ اس کو بھی تکلیف پہنچا ؤ گی۔
اس میں تمہارا نقصان ہے اور سب سے زیادہ احان کا نقصان ہے ۔ویسے میری بات مانو تو جاؤ اس سے بات کرو ۔
چلو کم سے کم اس کی ایک دفعہ بات تو سن لو اسے موقع تو دو بولنے کا ۔
اسے منانے کا ایک موقع تو دو ۔اتنا تو حق بنتا ہے نا اس کا اب تم اتنی ناراض تو نہیں ہو سکتی نا؟
تم تو بہت سویٹ بہت پیاری ہو بہت اچھی ہو ۔ اور تم یہ نہیں چاہو گی کہ تمہاری وجہ سے وہ تکلیف میں ہو ہے نا؟ تم بھی تو اس سے بہت پیار کرتی ہو نا کیا تم اسے تکلیف میں دیکھ سکتی ہو ؟
وہ آئلہ کے قریب صوفے پہ بیٹھ کے اس کا ہاتھ اپنے ہاتھوں میں لیتے پیار سے اسے سمجھانے کی کوشش کر رہا تھا آئلہ اسے تکے جا رہی تھی ۔
پر مجھے یہ سب بہت برا لگ رہا ہے وہ مجھے پہلے بھی تو بتا سکتے تھے نہ انہوں نے ایسا کیوں کیا؟
وہ سوالیہ نظروں سے رمیزکو دیکھنے لگی ۔
دیکھو جو بھی ہونا تھا ہو گیا۔ اس نے یہ سب کیوں کیا کس لیے کیا اب ان سب باتوں کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔ تو بس اتنا جان لو کہ اس میں تمہاری بھلائی تھی یہ سب تمہاری حفاظت کے لیے کیا تکلیف نہیں پہنچانا چاہتا تھا تمہیں کوئی اس نے اس لیے یہ سب کیا پلیز ایک دفعہ تو خود سمجھنے کی کوشش کرو تمہیں سب سمجھ آجائے گا تمہاری غلط فہمی دور ہو جائے گی پلیز ریلیکس ہو کے خود سوچو ان حالات کو مد نظر رکھتے ہوئے۔ جب تم خود دیکھوں گی نا تو تمہیں پتہ چل جائے گا ۔
وہ آئلہ کے گال پی نرمی سے چٹکی بھرتے ہوئے بولا ۔
تم محبت کرتی ہوں نا احان سے ہے نا ؟ یقین ہے یا نہیں اس پہ تمہیں بتاؤ مجھے ؟
وہ سوالیہ نظروں سے اسے دیکھنے لگا ۔
ہاں میں محبت کرتی ہوں اور مجھے یقین ہے ہاں میں یہ بات مان لوں گی کہ انہوں نے جو بھی کیا وہ میرے بھلے کے لیے کیا۔ وہ میرا برا نہیں چاہتے لیکن پھر بھی مجھے یہ سب بہت برا لگ رہا ہے میرے لئے بہت مشکل ہو رہی ہے اس سب کو قبول کرنا۔ کم سے کم مجھے بتانا چاہیے تھا ۔
وہ اداس ہوتے ہوئے بولی ۔
بار بار ایک ہی بات مت کرو اس نے تمہیں نہیں بتایا کیونکہ اس کے پیچھے وجہ تھی تمہیں بتا چکا ہوں نا تو یہ بات آپ اپنے دماغ سے نکال دو بھولنے کی کوشش کریں ۔ چلو شاباش اچھے بچوں کی طرح اب اداسی کو چھوڑو اور مسکراؤ اور جاؤ جاکے احان سے بات کرو ۔
چلو اگر بات نہیں کرنی ہے تو تم مت جاؤ جب وہ تم سے بات کرنے آئے گا تو تمہیں منائے گا تو پلیز زیادہ غصہ مت کرنا زیادہ دیر ناراض مت رہنا مان جانا ٹھیک ہے نا ۔
اس کے بدلے اگر تمہیں چاکلیٹ چاہیے تو میں تمہیں ڈھیرساری چوکلیٹس لادوں گا بتاؤ مجھے کیا تمہیں چاکلیٹ چاہیے ؟
وہ شرارت سے بولا تو آئلہ اسے گھورنے لگی ۔
نہیں مجھے کوئی چاکلیٹ نہیں چاہیے مجھے لالچ دینے کی ضرورت نہیں آپ کو۔ میں کوئی چھوٹی بچی نہیں ہوں۔
وہ ناراض ہوتے ہوئےبولی تو رمیز مسکرانے لگا ۔
ویسے ہو تو چھوٹی بچی بس تھوڑی سی بڑی ہو گئی ہو اب ہے نا ۔اور تھوڑی سی سمجھدار بھی ہونے لگی ہو ساری باتیں سمجھنے لگی ہو کافی سمارٹ ہوتی جا رہی ہو تم ۔ ویسے تمہارا نام بھی لگتا ہے چینج کرنا پڑے گا ۔
وہ سوچنے کے سے انداز میں بولا ۔آئلہ کے لبوں پر ہلکی سی مسکراہٹ پھیل گئی ۔
چلو فائنلی کم سے کم تھوڑا سا ہی سہی تم مسکرائی تو ویری گڈ بہت اچھی بات ہے اب بالکل بھی نہیں رونا اوکے ہنستی رہو، مسکراتی رہو اور اپنے مسٹر احان کو بہت تنگ کرتی رہو۔
وہ آئلہ کے سر پر ہاتھ پھیرتے ہوئے بولا اور اٹھ کھڑا ہوا ۔
آئلہ مسکرانے لگی ۔ رمیز نے اسے مسکراتے دیکھ کے ایک سکون کا سانس لیا ۔
ٹھیک ہے اب میں چلتا ہوں اوکے کوئی بھی بات ہو تو مجھے فون کر دینا ٹھیک ہے نا اپنا بہت خیال رکھنا اور اداس بالکل نہیں ہونا ایسے ہی رہنا اور اگر تم کہو تو میں احان کو تھوڑا سا ڈانٹتا جاتا ہوں کیا کہتی ہو ؟
وہ آئلہ کو تنگ کرتے ہوئے بولا ۔
نہیں اس کی ضرورت نہیں آپ کو کچھ بھی کہنے کی ضرورت نہیں ہے ۔
وہ سنجیدہ ہوتے ہوئے بولی ۔ رمیز نے اپنی ہنسی دانتوں تلے دبائی تھی وہ جانتا تھا کہ وہ کچھ ایسا ہی کہے گی ۔
کیوں اتنا سب کچھ کیا اس نے تھوڑا سا ڈانٹنا تو بنتا ہے نہ بلکہ تم کہو تو میں اسے ایک دو پنچ لگاتا ہوں اور اس کے عقل ٹھکانے لگا دیتا ہوں نہ تاکہ دوبارہ وہ کچھ بھی نہ چھپائے تم سے ۔
وہ سینے پہ ہاتھ باندھے آئلہ کی طرف دیکھتے ہوئے اس سے پوچھنے لگا ۔
نہیں میں نے کہا نہ اس کی ضرورت نہیں ہے آپ جائیں آپ کچھ بھی نہ کہیں ، میں خود کہہ لوں گی جو بھی کہنا ہوگا ۔
وہ رمیز کے روبرو ہوتے ہوئے بولی ۔
اوکے میں سمجھ گیا بہت فکر ہے تمہیں تم نہیں چاہتی کہ کوئی اور اسے کچھ بھی کہے نا ۔
ہاں بالکل ۔
رمیز نے مسکراتے ہوئے پوچھا تو اس نے ہاں میں سر ہلایا ۔
اوکے بائے اپنا خیال رکھنا اور اس کا بھی خیال رکھنا ۔
وہ مسکراتے ہوئے کمرے سے باہر کی طرف چلا گیا ۔
لاؤنج میں داخل ہوتے ہی وہ احان کی طرف بڑھا جو کہ صوفے پر بیٹھا کچھ سوچنے میں مصروف تھا ۔
کن سوچوں میں گم ہو؟ اسے منانے کے طریقے سوچ رہے ہوکیا بتاؤں مجھے ۔
وہ احان کے برابر صوفے پہ بیٹھتے ہوئے سنجیدہ انداز میں بولا ۔
ہاں سوچ رہا تھا اسے کیسے مناؤں ؟
احان پریشان ہوتے ہوئے بولا ۔
بھول جاؤ اسے، نہیں مانے گی وہ ۔ اس نے فیصلہ کر لیا کہ وہ ایک سیکنڈ بھی تمہارے ساتھ نہیں رہنا چاہتی اور میری بات مانو تو اسے جانے دو ۔ وہ بہت زیادہ ناراض ہیں تم سے ، وہ تم سے بات بھی نہیں کرنا چاہتی ہے نہ تمہاری شکل دیکھنا چاہتی ہے میرا نہیں خیال کہ اب تم لوگ ایک ساتھ رہ سکتے ہو ۔
رمیز نے بہت سنجیدہ انداز میں کہا اس کی بات سن کے احان کے چہرے پر پریشانی کے آثار نظر آنے لگے ۔
یہ تم کیا کہہ رہے ہو کچھ کہا کیا اس نے بتاؤ مجھے ۔
وہ اپنے ماتھے پر ابھرتے پسینے کے قطروں کو اپنی ہتھیلی سے صاف کرتے ہوئے پوچھنے لگا ۔
ہاں اس نے کہا یہ سب کچھ۔ اس نے کہا کہ تم اس کے سامنے مت آنا کہیں وہ کچھ کہہ نہ دے ایسا جس سے تمہیں تکلیف پہنچے اور ویسے بھی اس نے فیصلہ کر لیا ہے اب تم سے بات بھی نہیں کرنا چاہتی نہ کوئی تمہارے پاس رہناچاہتی ہے وہ بس یہاں سے جانا چاہتی ہے ۔
تو بتاؤ کیا کرو گے تم ؟
رمیز نے اپنی ہنسی دانتوں میں دباتے بہت سنجیدگی سے کہا جب کہ احان کے چہرے کی ہوائیاں اڑ چکی تھیں اس کے ہاتھ کانپ رہے تھے۔ وہ اپنے خشک ہوتے ہونٹوں پہ زبان پھر تے، اپنے ماتھے پر ابھرتے پسینے کے قطرے کو صاف کرنے لگا جو کہ تیری سے بہتے جا رہے تھے ۔
کیا ہوا اتنے پریشان کیوں ہو رہے ہو کیا تمہیں پتہ نہیں تھا کہ یہ سب ہوگا ۔
اس کے ہوش اڑتے دیکھ کر رمیز نے کہا ۔
تم نے کہا تھا اسے یہ سب بتانے کے لئے، دیکھا اب کیا ہو گیا میں یہ سب نہیں ہونے دے سکتا یہاں سے نہیں جانے دے سکتا میں نہیں رہ سکتا اس کے بغیر۔
تم نے کہا تھا نا بتانے کے لئے اب تمہیں کچھ کرنا ہوگا اسے روکو اسے سمجھاؤ پلیز اسے کہو کہ میں اس سے معافی مانگ رہا ہوں نا ، میں بہت شرمندہ ہوں میں کچھ بھی کرنے کو تیار ہوں میں دوبارہ نہیں کروں گا میں وعدہ کروں گا میں دوبارہ سے کوئی غلطی نہیں کروں گا تم اسے سمجھاؤ اسے کہو کہ مجھے ایک موقع دے دے میں دوبارہ سے ایسا کچھ نہیں کروں گا جس سے وہ ہرٹ ہو میں کچھ نہیں پ چھپاؤں گا پلیز اسے کہو کہ وہ مان جائے مجھے چھوڑ کر نہ جائے ۔
وہ رمیز کی منتیں کرنے لگا ۔
اتنے پریشان مت ہو اوکے اوکے فائن کہیں نہیں جا رہی وہ، کہیں نہیں جا رہی ریلیکس ۔
میں تو بس مذاق کر رہا تھا تم سے۔ اس نے کچھ بھی نہیں کہا تھا مجھے، میں تو بس تمہیں تنگ کر رہا تھا آئی ایم سوری تم اتنے سیریس ہو جاؤ گے مجھے اندازہ نہیں تھا ۔
احان کو بے حال ہوتا دیکھ کے رمیز نے حقیقت بتائی ۔
کیا!؟ کیا مطلب ہے کہ تم مذاق کر رہے تھے مطلب اس نے ایسا کچھ نہیں کہا ابھی جو تم مجھ سے کہہ رہے تھے ۔
احان غصہ ہوتے ہوئے زور سے اس کے کندھے پہ مکا مارتے ہوئے بولا ۔
اچھا نہ آئی ایم سوری، میں تو بس تنگ کر رہا تھا میں تو دیکھنا چاہتا تھا کہ کیا حالت ہوتی ہے تمہاری ۔
وہ اپنے کندھے کو سہلاتے ہنستے ہوئے بولا تو احان دانت پیس کے رہ گیا ۔تم دفع ہو جاؤ یہاں سے۔ پہلے میں اتنی ٹینشن میں ہوں اور تم نے تو کہا تھا میری ہیلپ کرو گے تم تو الٹا مجھے اس حال میں دیکھ کے مزے لے رہے ہو ۔
وہ غصہ ہوتے ہوئے بولا ۔
میں تو تم دونوں کو ہی اس حال میں دیکھ کے مزے لے رہا ہوں۔ مجھے سمجھ نہیں آرہی کہ یہ سب کیا ہورہا ہے ۔ویسے مجھے ایک بات کا اندازہ تو ہو گیا ہے تم دونوں واقعی ایک دوسرے سے بے حد محبت کرتے ہو اتنی ناراض ہے وہ تم سے غصہ بھی ہے لیکن پھر بھی یہ برداشت نہیں ہورہا تھا اسے کہ میں تمہیں کچھ کہوں ۔ واقعی مجھے لگتا ہے تم دونوں ایک دوسرے کے لئے ہی بنے ہو ۔
ویسے مجھے بہت خوشی ہو رہی ہے اور تمہیں اس حال میں دیکھ کے مزہ بھی آرہا ہے ۔
میرے خیال سے کافی دن تک تم ایسے ہی بے چین رہنے والے ہو بالکل اسی حال میں، اتنی آسانی سے نہیں ماننے والی وہ۔
بلکہ میں اسے جاتے ہوئے کہہ جاؤں گا کہ کم سے کم ایک ہفتہ تو تمہیں اسے تڑپا کے رکھے ۔
تاکہ تم دوبارہ ایسی کوئی غلطی نہ کرو ۔
وہ اٹھ کھڑا ہوا اور ہنستے ہوئے بولا تو احان اسے گھورنے لگا ۔
بہتر ہے کہ تم یہاں سے چلے جاؤ کہیں ایسا نہ ہو کہ میں تمہارا قتل کر دوں۔
وہ غصے سے آگ بگولا ہوتے اسے دیکھتے ہوئے بولا تو رمیز نے اسے دانت دکھائے ۔
ہاں اگر تم ایسا کرو گے تو ہوسکتا ہے میں نے ابھی جو کہا تھا وہ سچ میں ہو جائے گا پھر تو تم بھول ہی جانا اپنی چھوٹی سی ہنی شنی کو ۔چلو شاباش اٹھو اب جلدی سے میرا قتل کرو ۔
وہ ہنستے ہوئے بولا تو احان نے اٹھتے ہوئے اس کے پیٹ میں ایک مکا مارا ۔
زیادہ تنگ مت کرو مجھے ایسا نہ ہوں کہ میں اپنا سارا غصہ تم پہ نکال دوں تم جاؤ آفس جاؤ ۔
احان اس کا کان کھینچے ہوئے بولا ۔
ہاں ہاں اب سارے ظلم مجھ پہ کر لو اسے کچھ کہہ نہیں سکتے نا تو میں ہی ملا ہوں تمہیں ۔جا رہا ہوں میں، جاؤ تم جاکے مناؤ اس کو کیونکہ تمہاری زندگی کا سب سے اہم کام تو یہی ہے نا اور تو کچھ تم نے کرنا نہیں ہے مجنوں صاحب ۔
وہ احان کو چھیڑتے ہوئے بولا ۔اور تیزی سے وہاں سے نکلتے گھر سے باہر چلا گیا۔ احان کے چہرے پر مسکراہٹ پھیل گئے ۔
حد ہو گی یہ نہیں سدھرے گا میری حالت ایسی ہو گئی ہے اور اس کو مزے لینے کی پڑی ہے ۔وہ اپنے بالوں میں ہاتھ پھیرتے مسکراتے ہوئے کہہ رہا تھا ۔
اب جاؤں تھوڑی دیر بعد جاؤں؟ پتہ نہیں کیا ہوگا؟ وہ مجھے کمرے میں آنے بھی دے گی یا نہیں؟ اگر اس نے مجھے کمرے سے باہر نکال دیا تو میری عزت خاک میں مل جائے گی ۔
ایک عجیب سی کشمکش کا شکار ہوگیا ہوں میں ، سمجھ نہیں آرہی کیا کروں ، ایک چھوٹی سی لڑکی سے ڈر لگ رہا ہے مجھے ، کبھی نہیں سوچا تھا کہ ایسا دن بھی آئے گا کہ مجھے میرے کمرے میں جانے سے ڈر لگے گا۔
چلو کوئی نہیں زیادہ سے زیادہ کیا ہو جائے گا؟ بس اتنا نا کہ میری ہنی مجھے روم سے باہر نکال دے گی نا یہاں پہ کوئی ہے تو نہیں کسی کو پتہ کیسے چلے گا؟ ہاں بالکل تھوڑا سا تو سہہ ہی سکتا ہوں میں چلو کوئی بات نہیں ۔
زیادہ سے زیادہ کیا ہوگا کمرے سے باہر نکال دیں گی نہ یا کمرے میں آنے ہی نہیں دے گی بس اب گھر سے باہر تو نہیں نکالے گی مجھے ۔
اب یہاں کوئی ہے بھی نہیں جو یہ دیکھے گا ۔اب جو بھی ہو جائے منانا تو ہے اس کو اور منانے کے لئے کچھ بھی کرنا پڑے مجھے کرنا ہی ہوگا چلو احان عباس ہمت کرو اور جاؤ کمرے میں جا کے اسے مناؤ، بار بار ایک ہی بات رپیٹ کرنے سے کچھ نہیں ہوگا۔
وہ ایک گہری سانس لیتے چھوٹے چھوٹے قدم بڑھاتے ہوئے کمرے کی طرف چلنے لگا ۔دروازے کے قریب پہنچ کے روم کا دروازہ کھول کے کمرے میں جھانکا اور پھر کمرے میں داخل ہوگیا ۔
پورا کمرہ خالی تھا چاروں طرف نظر دوڑائی وہ کہیں بھی نظر نہیں آ رہی تھی ۔
وہ لمبی سانس بھرتے بیڈ کی طرف بڑھا اور جا کے بیٹھ گیا ۔وہ اپنے ہاتھوں کی انگلیوں کو مروڑے جا رہا تھا ۔
اسے ڈر لگ رہا تھا کہ پتا نہیں وہ کیا کہے گی ۔
وہ ڈریسنگ روم سے باہر نکلی تو سامنے احان کو دیکھ کے ایک پل کو وہی رکی تھی وہ اس کی طرف دیکھ کے اٹھ کھڑا ہوا ۔
ٹی شرٹ اور ٹراؤزر پہنے بال کھولے اور چہرے پہ سنجیدگی سجائے وہ کافی ناراض لگ رہی تھی ۔
چھوٹے چھوٹے قدم بڑھاتے وہ بیڈ کی طرف بڑھنے لگی ایک نظر احان پر ڈالی اور آرام سے بیڈ کی ایک سائیڈ پہ بیٹھ گئی ۔وہ بھی چپ چاپ اس کے برابر بیٹھ گیا ۔
دونوں نظریں جھکائے کافی دیر تک خاموش بیٹھے رہے ۔
وہ۔۔۔۔۔میں ۔۔۔۔۔دراصل۔۔۔۔میں کہنا چاہتا تھا کہ۔۔۔۔ وہ۔۔۔۔اصل میں مجھے کچھ سمجھ نہیں آرہا کہ میں کیا کہوں میرا مطلب ہے کہ۔۔۔۔۔۔ میں کہنا چاہتا ہوں لیکن کہہ نہیں پا رہا پتہ نہیں آپ سمجھیں یا نہیں مجھے بہت عجیب سا لگ رہا ہے مجھے ڈر لگ رہا ہے کہ کہیں آپ۔۔۔۔۔ پتا نہیں کیا کہیں گی آپ مجھے۔۔۔ میں پاگل ہو رہا ہوں ۔
ٹوٹے پھوٹے جملوں میں بولتے ہوئے وہ اپنے بال نوچنے لگا ۔
کیا مطلب ہے کہ آپ کو ڈر لگ رہا ہے آپ کیا کہنا چاہتے ہیں کہ میں ڈراؤنی لگ رہی ہوں ؟
اس کی بات سن کے وہ احان کو گھورتے ہوئے بولی ۔
نہیں۔۔۔۔ نہیں میرا یہ مطلب نہیں تھا۔۔۔۔میں یہ نہیں کہہ رہا۔۔۔۔۔۔دراصل مجھے ڈر لگ رہا ہے کہ کہیں آپ مجھے کمرے سے باہر نہ نکال دیں ۔Mr.psycho part 52 & 53
وہ ایک سانس میں بول گیا ۔
کیا!؟ میں کیوں آپ کو کمرے سے باہر نکالوں گی آپ کیا کہہ رہے ہیں یہ ؟
وہ حیرانگی سے اسے تکنے لگی ۔
کیونکہ آپ مجھ سے ناراض ہیں ، بہت غصہ ہیں نا، میری شکل نہیں دیکھنا چاہتی ، نا مجھ سے بات کرنا چاہتی ہیں تو مجھے لگا کہ شاید آپ مجھے کمرے سے باہر نکال دیں گی ۔
وہ نظریں جھکاتے ہوئے شرمندہ سے لہجے میں بولا ۔
ہاں اگر میں ایسا کر بھی دوں تو کیا ہو جائے گا ۔
وہ منہ بناتے ہوئے بولی۔Mr.psycho part 52 & 53
کچھ نہیں ہو گا کیا ہو جائے گا بس میں کمرے سے باہر چلا جاؤں گا چپ چاپ ۔
آئلہ کی طرف دیکھتے ہوئے وہ رنجیدہ لہجے میں بولا ۔
ہاں تو ٹھیک ہے پھر جائیں آپ یہاں سے جائیں کمرے سے باہر جائیں ۔
وہ سپاٹ لہجے میں بولی تو احان اسے تکنے لگا ۔
مطلب میں کمرے سے باہر چلا جاؤں یہی چاہتی ہیں آپ ۔
اس کی بات دہراتے ہوئے وہ بولا جیسے پھر سے سننا چاہتا ہو ۔
ہاں بالکل یہی چاہتی ہوں میں جو بھی آپ نے سننا بالکل میں یہی چاہتی ہوں کہ آپ کمرے سے باہر چلے جائیں ۔
وہ دو ٹوک انداز میں بولی ۔
مطلب آپ مجھ سے بات نہیں کریں گی اور ناراض رہیں گی؟
وہ آئلہ کے تھوڑا قریب ہوتے ہوئے بولا ۔
ہاں باکل مجھے بات نہیں کرنی اور میں ناراض ہی رہوں گی ۔
وہ اپنے چہرے پہ آتے بالوں کو پیچھے کرتے ہوئے بولی ۔
مجھے ایک بار موقع تو دے بات کرنے کا، ایک بار میری بات سن لیں ۔
وہ منت بھرے لہجے میں بولا ۔Mr.psycho part 52 & 53
کیا بات کرنی ہے آپ کو بولیں جو بھی بات کرنی ہے ایک دفعہ کریں اور پھر جائیں یہاں سے ۔
وہ بیڈ شیٹ پر اپنی انگلیوں سے گول دائرے بناتے ہوئے بولی ۔
کیا آپ مجھے معاف نہیں کر سکتی ؟ میرا مطلب ہے کہ میں بہت شرمندہ ہوں مجھے بہت برا لگ رہا ہے میں اپنی غلطی مان رہا ہوں کیا آپ مجھے ایک موقع نہیں دے سکتی میں وعدہ کرتا ہوں کہ دوبارہ ایسا کچھ نہیں کروں گا میں دوبارہ کوئی بھی بات آپ سے نہیں چھپاؤں گا پلیز مجھے ایک موقع دے دیں ۔میں کوئی بھی سزا بھگتنے کے لئے تیار ہوں ۔ آپ مجھے جو سزا دینا چاہیے وہ دے دیں میں ٹھیک ہے تیار ہو اس کے لیے بھی لیکن پلیز آپ مجھ سے اس طرح ناراض مت ہوں مجھ سے بالکل برداشت نہیں ہو رہا آپ مجھ سے بات کریں ۔
آپ سے بات کئے بغیر مجھے بالکل اچھا نہیں لگ رہا، دل بہت اداس ہے اور بہت بے چینی ہو رہی ہے ، ایسا لگ رہا ہے جیسے جینے کی وجہ ہی ختم ہو گئی ہے ۔
ایک دفعہ میری طرف دیکھیں تو سہی اسے مت کریں میں برداشت نہیں کر پا رہا یہ ۔
آپ کی خاموشی مجھے بہت تکلیف پہنچا رہی ہے ۔پلیز کچھ بولیں چلیں مجھے ڈانٹ دیں غصہ کر لیں مجھ پہ چیخیں چلائیں بے شک مجھے مار لیں۔
وہ آئلہ کا ہاتھ اپنے ہاتھوں میں لے اپنے گال پہ مارتے ہوئے بولا ۔
میں کیوں ماروں گی آپ کو ؟
وہ منہ بناتے ہوئے بولی ۔Mr.psycho part 52 & 53
کوئی بھی سزا دے دیں مجھے لیکن پلیز مجھ سے ناراض مت ہوں، مجھے بتائیں کہ میں کیا کروں آپ کو منانے کے لیے ایک بار بولیں تو سہی میں کچھ بھی کرنے کو تیار ہوں ۔
وہ منت بھرے انداز میں بولا ۔ آئلہ کے دونوں ہاتھوں کو اپنے دونوں گالوں پر رکھتے وہ اسے دیکھے جا رہا تھا ۔
مجھے کوئی بھی سزا نہیں دینی آپ کو اور میں آپ کو سزا دے کے کیا کروں گی؟ کیا آپ کو سزا دینے سے سب کچھ ٹھیک ہو جائے گا ایسا کچھ بھی نہیں ہوگا مجھے یہ سب بہت برا لگ رہا ہے مجھے نہیں سمجھ آرہا کہ میں کیا کروں ۔
وہ سر جھکاتے ہوئے بے حد اداسی سے کہنے لگی ۔
میں سمجھ سکتا ہوں آپ کی حالت ۔ لیکن آپ اداس مت ہو آپ خود کو اکیلا محسوس مت کریں میں ہوں آپ کے ساتھ ۔ میں ہمیشہ آپ کے پاس ہوں میں کبھی آپ کو اکیلا نہیں چھوڑوں گا ۔ کسی بھی حالت میں کچھ بھی ہو جائے کبھی بھی آپ کو میں کسی بھی چیز کی کمی محسوس نہیں ہونے دوں گا ۔
وہ آئلہ کے چہرے کو اپنے ہاتھوں کے پیالے میں بھرتے ہوئے بہت محبت سے کہنے لگا ۔وہ اس کے چہرے پہ تکنے لگی ۔
آپ کو رونا آ رہا ہے ؟ اگر آپ رونا چاہتے ہیں تو رو سکتے ہے لیکن پلیز مجھ سے کوئی امید مت رکھیے گا کیونکہ مجھے چپ کرانا نہیں آتا ۔Mr.psycho part 52 & 53
وہ اپنے گالوں سے احان کے ہاتھوں کو ہٹاتے ہوئے اسکی نم ہوتی آنکھوں میں جھانکتے ہوئے بولی ۔وہ ہلکے سے مسکرانے لگا ۔
ہاں رونا تو چاہتا ہوں لیکن آپ کے گلے لگ کے۔ کیا آپ اجازت دیں گی مجھے اپنے گلے لگنے کی؟
احان اسکی آنکھوں میں جھانکتے ہوئے کہنے لگا ۔Mr.psycho part 52 & 53
نہیں بالکل بھی نہیں آپ آرام سے جائیں اور اس صوفے پہ بیٹھ کے رو لیں ۔
وہ سائیڈ میں پڑے صوفے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے بولی تو احان ہنسنے لگا ۔
صوفے پہ کیوں کیا آپ کے پاس نہیں بیٹھ سکتا کیا ؟ یا پھر آپ کو میرے رونے سے تکلیف ہوگی اس لیے کہہ رہی ہیں آپ ؟
نہیں ایسی بات نہیں ہے بس مجھے اچھا نہیں لگتا کوئی روئے تو یو نو نا میں کتنی سوفٹ ہارٹ ہوں بس اس لئے۔
احان کی بات سن کے وہ منہ پھلاتے ہوئے بولی ۔
ہاں میں جانتا ہوں میری جانم بہت نرم دل ہے ۔
پلیز مجھے معاف کر دیں ۔ ایک بار گلے لگنے دیں۔
وہ آئلہ کے قریب ہوتے ہوئے بولا ۔Mr.psycho part 52 & 53
نہیں اس کی ضرورت نہیں ہے آپ مجھ سے دور رہیں میں نے آپ سے بات کر لی تو اس کا یہ مطلب نہیں ہے کہ میں آپ سے ناراض نہیں ہوں یا میری ناراضگی ختم ہو گئی ہے میں ابھی بھی آپ سے ناراض ہوں اور میں ناراض رہوں گی مجھے بات نہیں کرنی آپ سے ۔
وہ اٹھ کھڑی ہوئی اور دبے دبے غصے سے کہنے لگی۔ احان بھی اٹھ کھڑا ہوا اور اسکے سامنے جاتے ہوئے اسے دیکھنے لگا۔
ادھر دیکھیں میری طرف پلیز! آئی ایم سوری! پلیز مجھے معاف کر دیں، اتنا ناراض مت ہوں مجھ سے ، پلیز مجھے معاف کر دیں میں کچھ بھی کرنے کو تیار ہو، آپ سزا دیں مجھے۔Mr.psycho part 52 & 53
وہ آئلہ کو اپنی طرف کرتے ہوئے اس کے ہاتھ پکڑتے اپنے چہرے پر مارنے لگا۔
یہ کیا کر رہے ہیں آپ میں کیوں سزا دون آپ کو میں ایسا نہیں چاہتی ، چھوڑیں میرا ہاتھ مجھے برا لگ رہا ہے ۔
وہ ایک جھٹکے میں اپنا ہاتھ چھڑاتے ہوئے بولی ۔
تو پھر کیا کروں میں؟ بتائیں مجھے اس طرح ناراض تو مت ہوں مجھ سے یہ نہیں سہا جا رہا کوئی اور سزا دے دیں مجھے، یہ بتائیں مجھے میں کیسے مناؤں آپ کو لیکن پلیز آپ مجھ سے ناراض مت ہو اوکے چلیں واپس گھر چلتے ہیں، آپ نہیں رہنا چاہتی نا یہاں یا کہیں اور جانا چاہتی ہیں آپ ؟ بتائیں مجھے میں آپ کو وہی لے جاؤں گا ۔
وہ آئلہ کے ہاتھوں کو پھر سے اپنے ہاتھوں میں لیتے ہوئے بولا ۔
نہیں مجھے کہیں نہیں جانا ، مجھے کہیں بھی نہیں جانا ۔
وہ دھیمی آواز میں بولی ۔ احان اسے تکنے لگا ۔
تو کیا آپ یہی رہنا چاہتی میرے ساتھ ۔یا پھر یہاں بھی نہیں رہنا چاہتی آپ ۔
وہ سوالیہ نظروں سے اسے دیکھنے لگا ۔
بس ٹھیک ہے اوکے میں یہی رہ لوں گی ۔
وہ منہ بناتے ہوئے بولی ۔Mr.psycho part 52 & 53
اوکے ٹھیک ہے کوئی بات نہیں آپ ناراض ہو مجھ سے میں آپ کو منا لوں گا آپ یہاں پہ میرے ساتھ رہیں گی میرے لیے یہی بہت ہے تھینک یو سو مچ میرے ساتھ رہنے کے لئے مجھے ایک موقع دینے کے لیے مجھ پہ پھر سے بھروسہ کرنے کے لئے ۔
آپ غصہ ہیں لیکن پھر بھی مجھ سے بات تو کررہی ہیں میری بات سن رہی ہیں مجھے اچھا لگ رہا ہے اور میں اپنی جانم کو منا لوں گا آپ فکر نہ کریں، زیادہ دیر ناراض نہیں رہنے دوں گا میں اپنی ہنی کو۔
وہ اسے اپنے سینے سے لگاتے ہوئے اس کے کان میں سرگوشی کر رہا تھا ۔
ٹھیک ہے اب چھوڑیں مجھے ۔وہ احان کے حصار سے نکلتے ہوئے بولی ۔
اوکے اوکے ٹھیک ہے ٹھیک ہے آئم سوری ۔
وہ مسکراتے ہوئے بولا ۔
بہت پیاری لگ رہی ہیں آپ میری چھوٹی سی جانم میری ہنی بنی آئی لو یو سو مچ ۔کاش میں آپ کو بتا سکتا کہ میں آپ سے کتنی محبت کرتا ہوں کتنا چاہتا ہوں میں آپ کو میری تو جان ہی نکل گئی تھی مجھے لگا کہ شاید آپ مجھے چھوڑ کے چلی جائیں گی ، میں سمجھ رہا تھا کہ شاید آپ مجھے کمرے میں بھی نہیں آنے دیں گی پر آپ نے مجھے روم میں آنے دیا اور میری بات بھی سنی۔ اب بے حد سکون محسوس کررہا ہوں میں۔Mr.psycho part 52 & 53
وہ اپنے بالوں میں انگلیاں گھماتے ہوئے کہہ رہا تھا۔
ہاں کیونکہ آپ پاگل ہونے لگ جاتے ہیں۔ پتہ نہیں کیا ہوجاتا ہے آپکو۔
وہ اپنے سینے پہ بازو باندھتے ہوئے منہ پھلاتے ہوئے کہنے لگی۔Mr.psycho part 52 & 53

By barbie boo

Hey! I'm Barbie a novelist. I'm a young girl with a ROMANTIC soul. I love to express my feelings by writing.

Leave a Reply

Your email address will not be published.